ہنگامہ ہے کیوں برپا؟ منصور علی خان کے ٹوئٹ پر کھلاڑی پھٹ پڑے

اینکر منصورعلی خان نے ٹوئیٹر پر یاددہانی کے لیے ایک پرانی ویڈیو کلپ ٹویٹ کی ہے جس میں عمران خان یہ اعتراض کر رہے ہیں کہ اگر جہانگیر ترین پر الزام ثابت ہوتا ہے تو وہ پارٹی سے فارغ کر دیے جائیں گے۔

یہ ٹویٹ عمران خان کی پریس کانفرنس کے کچھ گھنٹوں بعد کیا گیا جس میں عمران خان نے بیس ووٹ فروشوں کو نکالنے کا اعلان کیا۔ ادھر منصور علی خان کی وڈیو پوسٹ ہوئی ادھر کپتان کی ٹوئٹر بریگیڈ آستینیں چڑھا کر میدان میں آگئی۔

ڈاکٹر عالیہ کریم نے منصور علی خان کو لفافہ صحافی قرار دیا۔

ذیشان نے سوال داغا کہ ابھی ترین کی پارٹی میں پوزیشن ہی کیا ہے۔ حرا کہتی ہیں منصور نے بہت ہی فضول حرکت کی۔ یہ ایجنڈا تعصب پر مبنی ہے۔ محمود شیخ نے انہیں لیری کنگ کہتے ہوئے کہا کہ وہ جائیں اور مریم کے انٹرویو پلانٹ کریں۔