لاک ڈاؤن کے دوران ریپ

لاک ڈاؤن کے دوران مختلف جرائم کی وارداتوں میں اضافہ دیکھنے میں آرہا ہے.
نائجیریا میں ریپ کیسز میں تشویشناک اضافہ ہوا ہے.

نائیجیریا کی وزیر برائے امور نسواں نے مطالبہ کیا ہے کہ وہ ادارے جن پر قانون نافذ کرنے کی ذمہ داری ہے کہ ریپ کیسز کی تفتیش اور انکوائری تیزی سے مکمل کرلیں.
ان کا کہنا ہے کہ لاک ڈاؤن کے دوران ایسے واقعات میں تشویش ناک حد تک اضافہ دیکھنے میں آیا ہے۔

نائجیریا میں ایک حکومتی اجلاس میں وزیر امور نسواں نے کہا کہ لاک ڈاؤن کی وجہ سے ریپ کے واقعات میں اضافہ ہورہا ہے. متعدد خواتین اور بچے ایسے درندوں کے ساتھ گھروں میں پھنس کر رہ گئے ہیں۔

خبر ایجنسی کے مطابق نائجیریا کی تمام چھتیس ریاستوں میں یہ واقعات پیش آرہے ہیں.

نائیجیریا کے پولیس نے گزشتہ دنوں ایک شخص کو گرفتار بھی کیا جس پر چالیس ریپ کرنے کا الزام ہے.